2022 College News Latest News

  ڈسکہ میں کالج کی یونیورسٹی میں تبدیلی طلبہ۔اساتذہ اور عوام کسی کے بھی مفاد میں نہیں 

عوامی نمائندے کیسے بیوروکریسی کے ہتھے چڑھ کر عوام ہی کے مفادات کے منافی کام کر رہے ہیں اس کی تازہ ترین مثال ڈسکہ کے گورنمنٹ کالج  میں پنجاب یونیورسٹی کا سب کیمپس قائم کرنے کی کاوش ہے ایم این اے سیدہ نوشین افتحار نے پرائم منسٹر پاکستان سے ملاقات کر کے اس یونیورسٹی کے قیام کا اجازت نامہ حاصل کیا  اور بعد ازاں 150 کروڑ روپے سالانہ ڈویلپمنٹ پروگرام میں بھی شامل کروا دئیے  ایک اچھا چلتے چلاتے کالج کو جو علاقے کے طلبہ کی بہتر خدمت سر انجام دے رہا ہو کو ختم کر کے کسی نوزائیدہ یونیورسٹی قائم کرنا جس  کی کوئی کہیں حثیت نہ ہو کوئی عوامی خدمت نہ ہو گی  اتحاد اساتذہ کا ہمیشہ سے موقف ہے کہ ذہین بیوروکریسی اور سیاستدان اگر اس ملک کو تجربات  کی بھینٹ چڑھانا چاہتے ہی ہیں تو ضرور کریں مگر چلتے چلاتے اداروں کو ختم کر کے نہیں الگ سے زمین لے کر وہاں بلڈنگ تعمیر کر کے عالمی معیار کی لیبارٹریاں معیاری فیکلٹی اور دیگر سہولیات فراہم کر کے ضرور کریں ویسے ڈسکہ سے تیس کلومیٹر کے فاصلے پر چار پانچ یونیورسٹیاں پہلے ہی موجود ہیں ان کی سہولیات میں اضافہ زیادہ مستحسن اقدام ہوگا گورنمنٹ کالج ڈسکہ کے ٹیچنگ اسٹاف نے ایک قرارداد اس ضمن میں پاس کی ہے بہتر ہوگا کہ سیاست دان انتظامی افسران ڈائریکٹر ڈپٹی ڈائریکٹر کی بجائے پیپلا کے عہدے داروں کو ان بورڈ لیں معاملے کو اچھی طرح سمجھیں اور پھر عملی قدم اٹھائیں تاکہ ممکنہ قومی نقصان سے بچا جا سکے 

Related posts

پنجاب کے کالجوں میں انتالیس نئی خواتین لیکجررز کی تعیناتی کے آرڈرز جاری

Ittehad

  سرکاری ملازمین کو ماہ ستمبر کی تنخواہ کی ادائیگی تیس سمبر کو یقینی بنائی جائے ۔۔فنانس ڈیپارٹمنٹ 

Ittehad

مرکزی پے اینڈ پروٹیکشن کمیٹی کا مشاورتی اجلاس ۔اہم فیصلے کیے گئے

Ittehad

Leave a Comment