2022 Latest News University / Board News

  سرگودھا یونیورسٹی میں بھی بے ضابطگی ۔خازن کے عارضی چارج کی حوالگی غیر قانونی،جواب طلب

پنجاب کی یونیورسٹیوں میں انتظامیہ کا اپنے اختیارات سے تجاوز کر کے من مانیوں کا رجحان پروان چڑھ رہا ہے محکمہ ہائر ایجوکیشن پنجاب کی نوٹس میں یہ بات آئی ہے اور سیکرٹری ہائر ایجوکیشن کے ایما پر سیکشن افیسر یونیورسٹیز ظہیر احمد نے سرگودھا کے وائس چانسلر سے جواب طلب کیا ہے کہ یونیورسٹی میں مستقل خازن کی ریٹائرمنٹ پر عارضی چارج دیتے وقت قواعد و ضوابط کا خیال نہیں رکھا گیا سرگودھا یونیورسٹی کے آرڈیننس کے مطابق خازن یونیورسٹی کا کل وقتی آفیسر ہوتا ہے اور اسے چانسلر تعینات کرتا ہے آرڈیننس کی دفع پندرہ کے بغور مطالعہ سے یہ بلکل واضح ہو جاتا ہے کہ خازن کو چانسلر تعینات کرتا ہے اور جونہی یہ پوسٹ کسی بنا پر خالی ہوتی ہے تو عارضی چارج ( لک آفٹر ) کا چارج بھی دینے کا اختیار بھی چانسلر کو ہی حاصل ہے وائس چانسلر کا  از خود عارضی چارج دینا  خلاف ورزی ہے اور ناقابل برداشت ہے لہذا مجھے یہ ہدایت کی گئی ہے کہ آپ پروفیسر مقصود سرور اعوان چیرمین اکنامکس ڈیپارٹمنٹ کو دیا گیا یہ چارج  واپس لیں آرڈیننس کی دفع پندرہ کے مطابق ایڈیشنل چارج میں توسیع ممکن نہیں لہذا مستقل اپوائنٹمنٹ کے عمل میں تیزی لائیں  سلیکشن بورڈ کی میٹنگ کے انعقاد کا بندوست کریں اور اس بات کی وضاحت فرمائیں کہ کیوں ایڈیشنل چارج میں توسیع کی درخواست بیس دن کی تاخیر سے کیوں ارسال کی گئی  اس جواب طلبی کا جواب سات دن کے اندر دیا جائے تاکہ مزید ضابطے کی کارروائی کی جا سکے

Related posts

کمیشن کی سفارشات کے بغیر حکومت اب کنٹریکٹ ملازمین کو ریگولرائز کر سکے گی۔۔ قانون میں ترمیم

Ittehad

نیشنل یونیورسٹی آف میڈیکل سائنسز کے ضرورت مند طالب علموں کے لیے ایچ ای سی کے سکالرشپ

Ittehad

بورڈ ڈیوٹی ادا نہ کرنے والوں کی اے سی آر میں ایڈورس ریمارکس لکھے جائیں

Ittehad

Leave a Comment